وفاقی تعلیمی اداروں میں انٹرپرینیورشپ نصاب کا آغاز کردیا گیا

ویب ڈیسک  منگل 16 اپريل 2024
(فوٹو: فائل)

(فوٹو: فائل)

 اسلام آباد: وفاقی تعلیمی اداروں میں انٹرپرینیورشپ (کاروبار سکھانے) کے نصاب کا آغاز کردیا گیا ہے۔

سرکاری اسکولوں میں اب طلبہ کو کاروبار کرنا سکھایا جائے گا۔ نصاب کو طالب علموں میں کاروباری مہارتوں کو فروغ دینے، جدت طرازی اور تخلیقی صلاحیتوں کے لیے ضروری آلات اور ذہنیت سے آراستہ کرنے کے لیے احتیاط سے تیار کیا گیا ہے اور اگلے تعلیمی سیشن سے گریڈ 6 سے 10 تک کے طلبہ کو انٹرپرینیورشپ کی دنیا میں جانے کا موقع ملے گا۔

سیکرٹری ایجوکیشن محی الدین وانی کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ یہ نصاب گلگت بلتستان میں پچھلے 2 سال میں نافذ کیے گئے کامیاب ماڈل کی عکاسی کرتا ہے۔ روایتی انداز کے تحت سیکھنے کے برعکس یہ نیا نصاب پروجیکٹ کے تحت سیکھنے پر توجہ مرکوز کرے گا، جس سے طلبہ نظریاتی علم کو حقیقی دنیا کے منظرناموں کے مطابق سمجھ سکیں گے۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ اس اقدام کے کامیاب نفاذ کو یقینی بنانے کے لیے، FDE (ICT) میں 200 اساتذہ کو تربیت فراہم کی جائے گی۔ چھوٹی عمر میں انٹرپرینیورشپ کو متعارف کروانا نہ صرف کاروباری جذبے کو پروان چڑھاتا ہے بلکہ تعمیری سوچ، مسائل کو حل کرنے اور ٹیم ورک جیسی قیمتی مہارتیں بھی پیدا کرتا ہے۔ یہ اقدام روایتی تعلیم کے طریقوں سے ہٹ کر خصوصی ہدف کے تحت چلنے پر مبنی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔