محکمہ صحت پختونخوا نے بشریٰ بی بی کے طبی معائنے کی اجازت مانگ لی

ویب ڈیسک  ہفتہ 20 اپريل 2024
(فوٹو: فائل)

(فوٹو: فائل)

 پشاور: محکمہ صحت پختونخوا کی جانب سے بشریٰ بی بی کے طبی معائنے کے لیے پنجاب حکومت سے ایک بار پھر اجازت طلب کی گئی ہے۔

سابق وزیراعظم اور بانی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کے طبی معائنے کے لیے محکمہ صحت خیبر پختونخوا نے پنجاب حکومت کو یاددہانی کا خط ارسال کردیا ہے، جس میں سابق خاتون اول کے طبی معائنے کی غرض سے میڈیکل ٹیم کے لیے اجازت مانگی گئی ہے۔

بشریٰ بی بی کے طبی معائنے کے حوالے سے وزیر صحت خیبرپختونخوا سید قاسم علی شاہ کی جانب سے حکومت پنجاب کو ایک بار پھر یاددہانی کے لیے بھیجیے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ 3 اپریل کو لکھے گیے خط کا ابھی تک کوئی جواب موصول نہیں ہوا۔

خط کے متن میں مزید کہا گیا ہے کہ سابق وزیراعظم عمران خان بشریٰ بی بی کی صحت کے حوالے سے کئی بار تحفظات کا اظہار کرچکے ہیں۔بشریٰ بی بی کی صحت کے حوالے سے ہمیں بھی شدید تحفظات ہیں۔ حکومت خیبرپختونخوا کی جانب سے طبی ماہرین پر مشتمل ٹیم کو بشریٰ بی بی کے طبی معائنے کی اجازت دی جائے۔

محکمہ صحت کے پی کی جانب سے بھیجے گئے خط کے مطابق بشریٰ بی بی کی صحت کے حوالے سے میڈیا پر گردش کرنے والی خبروں پر حکومت پنجاب سے رابطہ کیا تھا، ہم نے پہلے بھی بشریٰ بی بی کی صحت کے حوالے سے چیف سیکرٹری پنجاب کے نام خط لکھا تھا۔ خط میں وزیر صحت نے سابق وزیر اعظم عمران کی اہلیہ بشریٰ بی بی کی صحت کے بارے میں تحفظات کا اظہار بھی کیا گیا تھا۔

صوبائی وزیر صحت نے خط میں لکھا کہ میرے دفتر سے جاری ہونے والے خط میں بشریٰ بی بی کو زہریلی خوراک سے متعلق خبروں پر تشویش کا اظہار کیا گیا تھا۔ہم نے خط میں خیبرپختونخوا حکومت کی جانب سے ڈاکٹروں پر مشتمل پینل کی بشریٰ بی بی کے طبی معائنے کی درخواست کی تھی ۔ہم چاہتے ہیں حکومت خیبرپختونخوا کے ڈاکٹروں پر مشتمل پینل بشریٰ بی بی کا تفصیلی معائنہ کرے۔ پچھلے خط کے متن کے مطابق طبی معائنہ اور صحت کی خدمات تک رسائی ہر انسان کا بنیادی آئینی حق ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔