حزب اللہ کے ڈرون حملے میں زخمی اسرائیلی فوج کا میجر دوران علاج ہلاک

ویب ڈیسک  پير 22 اپريل 2024
27 سالہ میجر ڈور زیمل کے ساتھ ان کے دیگر 13 اہلکار بھی زخمی ہوئے تھے

27 سالہ میجر ڈور زیمل کے ساتھ ان کے دیگر 13 اہلکار بھی زخمی ہوئے تھے

تل ابیب: رواں ماہ کی 17 تاریخ کو لبنان کے ایک علاقے میں اسرائیلی فوج پر کیے گئے حزب اللہ کے ڈرون حملے میں 14 اہلکار زخمی ہوگئے تھے جن میں سے ایک میجر نے آج دوران علاج دم توڑ دیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیلی فوج کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 17 اپریل کو زخمی ہونے والے میجر 27 سالہ ڈور زیمل  زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے جن کی آئندہ ماہ شادی طے تھی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ میجر زیمل نے اپنے تمام اعضا عطیہ کرنے کی وصیت کی تھی اس لیے ان کی تدفین قدرے تاخیر سے یہودا کے قبرستان کے ملٹری سیکشن میں ہوگی۔

ایک ہفے قبل کیے گئے حزب اللہ کے اس ڈرون حملے میں زخمی ہونے والے متعدد اہلکار اب بھی زیر علاج ہیں جن میں سے 4 کی حالت نازک ہونے کے سبب ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

یاد رہے کہ حماس کے اسرائیل پر 7 اکتوبر کو حملے میں اور اس کے بعد سے جاری دوبدو لڑائی میں اسرائیلی فوج کے 2 ہار کے قریب اہلکار مارے گئے ہیں جب کہ یہ لڑائیاں اب لبنان اور شام تک پھیل گئی ہیں۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔