زمینداروں کے مسائل پروزیراعلیٰ بلوچستان کی وزیراعظم سے ملاقات

ویب ڈیسک  پير 13 مئ 2024
(فوٹو : فائل)

(فوٹو : فائل)

وزیراعظم محمد شہبازشریف کی زیر صدارت بلوچستان کے امور کے حوالے سے  اہم اجلاس میں  وزیر اعلیٰ بلوچستان سرفراز احمد بگٹی کی زیر قیادت حکومت بلوچستان کے وفد نے شرکت  کی۔

وزیراعظم ہاؤس میں منعقدہ اجلاس کے شرکاء سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ بلوچستان پاکستان کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل صوبہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے امید ہے بلوچستان کے وزیر اعلیٰ کی زیر قیادت نئی صوبائی کابینہ صوبے کے مسائل حل کرنے اور اسے ترقی کی راہ پر ڈالنے میں اپنا کردار ادا کرے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ بلوچستان کے عوام کی فلاح و بہبود ہماری اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت بلوچستان کی ترقی و خوشحالی کے لیے صوبائی حکومت کے ساتھ مل کر کام کرے گی۔

وزیراعظم نے بلوچستان میں زرعی ٹیوب ویلوں کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کے عمل کو تیزی سے مکمل کرنے کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ زرعی ٹیوب ویلوں کی شمسی توانائی پر منتقلی کے حوالے سے وفاقی حکومت ہر ممکن مدد فراہم کرے گی۔

انہوں نے ہدایت کی کہ زرعی ٹیوب ویلوں کی شمسی توانائی پر منتقلی تک بلوچستان میں میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کم سے کم کی جائے تا کہ فصلوں اور باغات سے زرعی پیداوار متاثر نہ ہو ۔

وزیراعظم نے جنوبی بلوچستان پیکیج کے اہم منصوبوں پر کام کی رفتار تیز کرنے کی بھی ہدایت کی ۔

وزیراعظم نے کہا کہ صوبے کے نوجوانوں کو تعلیم اور ملازمت کے یکساں مواقع فراہم کیے جا رہے ہیں تاکہ بلوچستان کے عوام ملکی ترقی میں اپنا اہم کردار ادا کرتے رہیں۔

اجلاس میں  وفاقی وزیر خزانہ و محصولات محمد اورنگزیب ، وفاقی وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال ،وفاقی وزیر تجارت جام کمال خان موجود تھے۔

علاوہ ازیں بلوچستان کے صوبائی وزیر منصوبہ بندی و ترقی ظہور احمد بلیدی ، وفاقی وزیر خزانہ شعیب نوشیروانی ، صوبائی پارلیمانی سیکرٹری ماہی گیری حاجی برکت رند ، صوبائی اراکین اسمبلی میر رحمت صالح بلوچ ، حاجی محمد خان ، زمرک خان اچکزئی، چیف سیکرٹری بلوچستان شکیل قادر اور وفاقی حکومت کے متعلقہ اعلیٰ سرکاری افسران بھی اجلاس میں موجود تھے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔