پی سی بی نے حارث رؤف کا سینٹرل کنٹریکٹ ختم کردیا

اسپورٹس رپورٹر  جمعرات 15 فروری 2024
کرکٹر کو 30 جون 2024 تک کسی بھی غیر ملکی لیگ میں کھیلنے کی این او سی جاری نہیں جائے گا (فوٹو: ایکسپریس ویب)

کرکٹر کو 30 جون 2024 تک کسی بھی غیر ملکی لیگ میں کھیلنے کی این او سی جاری نہیں جائے گا (فوٹو: ایکسپریس ویب)

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی)  نے حارث رؤف کو دورہ آسٹریلیا کے دوران ٹیسٹ نہ کھیلنے پر بڑی سزا سنادی۔

پاکستان کرکٹ بورڈ  نے فاسٹ بولر حارث رؤف کا سینٹرل کنٹریکٹ ختم کردیا ہے۔ یہ فیصلہ دورہ آسٹریلیا 24-2023 کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل ہونے سے ان کے انکار کی تحقیقات کی روشنی میں کیا گیا ہے۔

یہ پڑھیں : صائم پلان کا حصہ ہیں تو حارث کو کیوں چھوڑ دیا؟ رمیز راجا کا سوال

پی سی بی کی ایک کمیٹی کی طرف سے اس معاملے کی  مکمل سماعت  کے بعد اور تمام اسٹیک ہولڈرز کے خیالات کو مدنظر رکھتے ہوئے حارث کا سینٹرل کنٹریکٹ یکم دسمبر 2023 سے ختم کر دیا گیا ہے اور انہیں 30 جون 2024 تک کسی بھی غیر ملکی لیگ میں کھیلنے کی این او سی جاری نہیں کی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں : ابتدائی تین ٹی20 مقابلوں میں شاہین، حارث نے رنز کے انبار لگوادیے

پی سی بی انتظامیہ نے 30 جنوری 2024 کو انصاف کے اصولوں کے مطابق حارث کو سماعت کا موقع فراہم کیا تھا تاہم ان کا جواب غیر تسلی بخش پایا گیا۔

اسی سے متعلق : حارث نے ریٹائرمنٹ کا ذہن کیوں بنالیا تھا؟ وجہ سامنے آگئی

پی سی بی کا کہنا ہے کہ پاکستان کے لیے کھیلنا کسی بھی کھلاڑی کے لیے اعزاز کی بات ہے۔ کسی بھی طبی رپورٹ یا معقول وجہ کی عدم موجودگی میں پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ کا حصہ بننے سے انکار سینٹرل کنٹریکٹ کی خلاف ورزی ہے۔

مزید پڑھیں: سینٹرل کنٹریکٹ کی خلاف ورزی حارث رؤف کو شوکاز نوٹس جاری

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔