بچوں کو جنسی حملوں سے بچاؤ کی آگاہی دی جائے، ماہرہ خان

ویب ڈیسک  جمعرات 11 جنوری 2018
ماؤں کو بھی ترغیب دے کر بچوں میں ہراسانی سے بچنے کا شعور پیدا کیا جاسکتا ہے، ماہرہ خان، فوٹو: فائل

ماؤں کو بھی ترغیب دے کر بچوں میں ہراسانی سے بچنے کا شعور پیدا کیا جاسکتا ہے، ماہرہ خان، فوٹو: فائل

 کراچی: پاکستان کی معروف اداکارہ ماہرہ خان نے بچوں کو جنسی زیادتی سے محفوظ رکھنے کے لیے تعلیمی نصاب میں جنسی حملوں سے بچاؤ کے موضوع کو شامل کرنے اور والدین کو اس سے متعلق آگاہی فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

زینب قتل کے خلاف فنکاروں کے ہمراہ کراچی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرے میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے ماہرہ خان نے کہا کہ قصور واقعے پر لوگوں کا باہر نکلنا خوش آئند ہے اور لوگوں کا احتجاج کے لیے جمع ہونا بچوں سے زیادتی کرنے والوں کے لیے پیغام ہے کہ ہم انُ درندوں سے زیادہ مضبوط ہیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں:  قصورمیں دوسرے دن بھی احتجاج، مظاہرین کا رکن اسمبلی کے دفترپردھاوا

ماہرہ خان نے کہا کہ بچوں کے جنسی استحصال جیسے مسائل کا طویل المیعاد بنیادوں پر حل نکالنا ہوگا اور ہمیں زیادتی جیسے جرائم کے خاتمے کے لیے آواز بلند کرتی رہنی چاہیے، وقت آگیا ہے کہ بچوں کو جنسی زیادتی سے بچانے کے لیے آگاہی فراہم کی جائے اور اس سلسلے میں اسکولوں کے تعلیمی نصاب میں مضامین شامل ہونے چاہیئں جب کہ ماؤں کو بھی ترغیب دے کر بچوں میں ہراسانی سے بچنے کا شعور پیدا کیا جاسکتا ہے۔

ماڈل اداکارہ کا کہنا تھا کہ ایک وقت ایسا آئے گا کہ ہمیں کبھی زینب ’ہیش ٹیگ‘ یا ’جسٹس فار زینب‘ کے نعرے نہ لگانے پڑیں اور اس امر کو یقینی بنانا ہے کہ ایسا واقعہ نہ ہو، زینب کےاہل خانہ کوانصاف ملنا چاہیے اور حکمرانوں کی ذمے داری ہے کہ لوگوں کو انصاف فراہم کرے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔