ڈی آئی خان میں پولیس چوکی پر فائرنگ اوراسپتال میں خودکش دھماکا، 6 اہلکاروں سمیت 9 افراد شہید

ویب ڈیسک / رمضان سیماب  اتوار 21 جولائ 2019
دہشتگردوں نے چوکی پر فائرنگ کی اور جب پولیس اہلکاروں کی لاشیں اسپتال پہنچائی گئیں تووہاں خودکش دھماکا کردیا گیا ۔ فوٹو : اے ایف پی

دہشتگردوں نے چوکی پر فائرنگ کی اور جب پولیس اہلکاروں کی لاشیں اسپتال پہنچائی گئیں تووہاں خودکش دھماکا کردیا گیا ۔ فوٹو : اے ایف پی

ڈی آئی خان: دہشتگردوں کی پولیس چوکی پر فائرنگ اور ڈی ایچ کیو اسپتال میں خودکش دھماکے کے نتیجے میں 6 اہلکاروں سمیت 9 افراد شہید جب کہ متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق ڈیرہ اسماعیل خان کی ڈیرہ کوٹلہ سیدان پولیس چیک پوسٹ پر موٹر سائیکل سوار دہشت گرد فائرنگ کرکے فرار ہوگئے۔ فائرنگ کے نتیجے میں 2 اہلکار شہید ہوگئے۔ شہید اہلکاروں کی شناخت کانسٹیبل جہانگیر اور کانسٹیبل انعام کے نام سے ہوئی، جہانگیر کا اعجاز آباد مریالی جب کہ انعام کاتعلق کورائی سے ہے۔

فائرنگ کے بعد شہید پولیس اہلکاروں کی لاشیں ڈسٹرکٹ اسپتال لائی گئیں تو اسپتال کے ٹراما سینٹرکے گیٹ پردھماکا ہوگیا۔ جس کے نتیجے میں مزید 4 اہلکار شہید اور متعدد زخمی ہوگئے۔ بڑی تعداد میں زخمیوں کے باعث کئی کو کمبائن ملٹری اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ سی ایم ایچ ذرائع کا کہنا ہے کہ اسپتال میں 22 زخمی اور 5 لاشیں لائی گئی ہیں۔

واقعے کے بعد اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے جب کہ پولیس اور قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکاروں کی بڑی تعداد علاقے میں تعینات کردی گئی ہے۔ بم ڈسپوزل اسکواڈ کے عملے نے مزید دھماکا خیز مواد کی موجودگی کے خطرے کے پیش نظر سرچ آپریشن کیا۔

ڈی پی او سلیم ریاض کا کہنا ہے کہ ٹراما سینٹر کے دروازے پر خودکش دھماکا لڑکی نے کیا ہے۔ دوسری جانب سیکیورٹی اداروں نے سی سی ٹی وی فوٹیجز حاصل  کرکے مزید تحقیقات شروع کردی ہیں۔

دھماکے میں شہید دیر لوئر کے رہائشی دو پولیس اہلکاروں کی نماز جنازہ پولیس لائن پشاور میں ادا کردی کی گئی جس میں آئی جی خیبرپختونخوا  ڈاکٹر محمد نعیم خان اور صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے بھی شرکت کی جس کے بعد شہداء کے جسد خاکی سلامی کے بعد آبائی علاقوں کو روانہ کر دیئے گئے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔