’’آریان خان کے پاس سے منشیات برآمد نہیں ہوئی‘‘

ویب ڈیسک  منگل 12 اکتوبر 2021
این سی بی  نے آریان کے پاس سے کوئی منشیات برآمد نہیں کی، وکیل فوٹوفائل

این سی بی نے آریان کے پاس سے کوئی منشیات برآمد نہیں کی، وکیل فوٹوفائل

ممبئی: آریان خان کے وکیل ستیش مان شیندے نے کہا ہے کہ آریان کے پاس سے کوئی منشیات برآمد نہیں ہوئی وہ بے گناہ ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق آریان خان کے وکیل ستیش مان شیندے نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ آریان کی ضمانت کی درخواست پر سماعت 13 اکتوبر کو سیشن کورٹ میں ہوگی۔

آریان خان کی ضمانت کی درخواست میں 29 بنیادیں درج کی گئی ہیں جو ان کے بے گناہ ہونے اور انہیں  موجودہ کیس میں جھوٹے مقدمے میں ملوث کرنےسے شروع ہوتی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: آریان خان کو گرفتار کرنیوالے آفیسر کا پولیس پر جاسوسی کا الزام

رپورٹس کے مطابق ستیش مان شیندے نے عدالت میں پہلے دن سے دلیل دی ہے کہ این سی بی کے عہدیداروں کو آریان کے پاس سے کوئی منشیات نہیں ملی۔ لہذا  نارکوٹک ڈرگز اینڈ سائیکو ٹروپک سبسٹنس (این ڈی پی ایس) کی دفعہ 37 کے تحت ضمانت پر پابندی کا حوالہ دیتے ہوئے این سی بی کی ضمانت نہ دینے کی درخواست آریان پر لاگو نہیں ہوتی۔ خاص طور پر اس صورت میں جب اس کے پاس سے منشیات برآمد نہیں ہوئی۔

یہ بھی پڑھیں: شاہ رخ خان کے بیٹے آریان کو 20 سال تک کی سزا ہوسکتی ہے

دوسری جانب آریان کی گرفتاری کے اس مشکل وقت میں جب شاہ رخ خان اور ان کی اہلیہ گوری کی نیندیں اڑ گئی ہیں۔ کنگ خان کے چاہنے والے ان کے اور ان کے گھر والوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کررہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  شاہ رخ خان کا بیٹا آریان خان منشیات کیس میں گرفتار

واضح رہے کہ نارکوٹکس کنٹرول بیورو نے 2 اکتوبر کو ممبئی سے گووا جانے والے ایک بحری جہاز پر چھاپہ مارکر منشیات برآمد کی تھی۔ اس جہاز پر شاہ رخ خان کے بیٹے آریان خان بھی موجود تھے جنہیں پوچھ تاچھ کے بعد چھاپے کے اگلے روز یعنی 3 اکتوبر کو گرفتار کیا گیاتھا۔ آریان خان کی ضمانت مسترد ہوچکی ہے اور وہ تاحال این سی بی کی تحویل میں ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔