کراچی سمیت سندھ کے کئی شہروں میں بجلی کا طویل بریک ڈاؤن

ویب ڈیسک  اتوار 28 مئ 2017
بجلی کی بندش کے باعث شہریوں کو رمضان المبارک کی پہلی سحری میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔  فوٹو: فائل

بجلی کی بندش کے باعث شہریوں کو رمضان المبارک کی پہلی سحری میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ فوٹو: فائل

 کراچی / حیدر آباد / نواب شاہ / میرپور خاص: کراچی سمیت سندھ کے مختلف شہروں میں بجلی کے طویل بریک ڈاؤن کے باعث رمضان المبارک کی پہلی سحری میں عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

ایکسپریس نیوزکے مطابق کراچی میں کے الیکٹرک کے متعدد گرڈ اسٹیشنز متاثر ہوگئے ہیں جس کے باعث بڑا بریک ڈاؤن ہوگیا۔ بریک ڈاؤن کے نتیجے میں ناظم آباد، گلشن اقبال، پی ای سی ایچ ایس، گلستان جوہر، نارتھ کراچی، اسکیم 33، لانڈھی، کورنگی، گارڈن، شو مارکیٹ، رامسوامی، رنچھوڑ لائن، عثمان آباد، کیماڑی، کھارادر، میٹھادر، لی مارکیٹ، لیاری کے علاقوں میں بجلی معطل ہو گئی ہے جبکہ شاہ فیصل کالونی، ملیر، قائد آباد میں بھی بجلی کی آنکھ مچولی جاری ہے۔ بجلی کی بندش کے باعث شہریوں کو رمضان المبارک کی پہلی سحری میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ ایکسٹرا ہائی ٹینشن ٹرپنگ سے بجلی کی فراہمی میں تعطل آیا، کے الیکٹرک کا عملہ جلد از جلد بحالی کے لیے مصروف عمل ہے جبکہ متاثرہ علاقوں کو جلد نارمل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

دوسری جانب اندرون سندھ میں حیدرآباد، نواب شاہ، میرپورخاص ڈویژن کے 14 ڈسٹرکٹ میں بجلی بند ہوگئی، بریک ڈاؤن کے باعث دادو، ٹھٹہ، بدین، جامشورو، ٹنڈو محمد خان میں بھی بجلی کی فراہمی معطل ہے۔ بجلی کی بندش کے باعث شہریوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

ترجمان حیسکو کا کہنا ہے کہ 500 کے وی کی ٹرانسمیشن لائن ٹرپ ہونے کی وجہ سے حب کو پاور پلانٹ کا جنریشن یونٹ بند ہو گیا جس کے نتیجے میں حیسکو کے 76 گرڈ اسٹیشن بھی بند ہو گئے ہیں جبکہ جینکوز بھی بند ہے۔

محمد صادق اکبر نے بتایا کہ 2 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کے بعد حیدرآباد اور ڈی ڈی این فائیو بریکر سے دولت پور گرڈ اسٹیشن کی بجلی بحال ہو گئی ہے تاہم جامشورو پاور ہاؤس چلنے پر بجلی کا بریک ڈاؤن ختم ہوجائے گا جبکہ متاثرہ اضلاع میں بھی بجلی بحال ہونے میں 2 گھنٹے لگ سکتے ہیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔