پاکستان ہمسایہ ملک کی مدد سے ہونے والی دہشت گردی کا شکار ہے، ملیحہ لودھی

ویب ڈیسک  منگل 14 فروری 2017
گزشتہ 4 سال سے پاکستان دہشت گردی کے خلاف کامیاب حکمت عملی پر عمل پیرا ہے، ڈاکٹرملیحہ لودھی : فوٹو : فائل

گزشتہ 4 سال سے پاکستان دہشت گردی کے خلاف کامیاب حکمت عملی پر عمل پیرا ہے، ڈاکٹرملیحہ لودھی : فوٹو : فائل

نیویارک: اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹر ملیحہ لودھی کا کہنا ہے کہ پاکستان بیرون ملک سے ملنے والی معاونت سے ہونے والی دہشت گری سے متاثر ہے۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں دہشت گردی پرہونے والے مباحثے میں خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر ملیحہ لودھی کا کہنا تھا کہ طاقت کا غیرقانونی استعمال، بیرونی جارحیت اور غیرملکی قبضے دہشت گردی کو بڑھا رہے ہیں اور پاکستان بھی غیرملکی معاونت سے ہونے والی دہشت گردی کا شکار ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے پڑوسیوں نے سارک کو بھی یرغمال بنارکھا ہے تاہم پاکستان گزشتہ 4 سال سے  دہشت گردی کے خلاف کامیاب حکمت عملی پر عمل پیرا ہے اور آپریشن ضرب عضب کے ذریعے دہشت گردی کا صفایا کیا جارہا ہے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: لاہور خودکش حملے میں 2 اعلیٰ پولیس افسران سمیت 13 افراد شہید

ملیحہ لودھی نے کہا کہ دہشت گردی کے خاتمے کے لئے دیرینہ تنازعات کا حل  اور انسدادی مہم کے باوجود دہشت گردی کے خطرات بڑھنے کی وجوہات  کا تعین انتہائی ضروری ہے تاہم دہشت گردی کے خلاف بین الاقوامی مہم کو اسلام سے منسلک نہ کیا جائے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: کشمیریوں کو مستقبل کے تعین میں بھارتی بربریت کا سامنا ہے

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔