چارسدہ کی عدالت پر دہشتگردوں کے حملے میں 7 افراد شہید، متعدد زخمی

ویب ڈیسک  منگل 21 فروری 2017
واقعے کے بعد علاقے کی فضائی نگرانی جاری ہے فوٹو: اے ایف پی

واقعے کے بعد علاقے کی فضائی نگرانی جاری ہے فوٹو: اے ایف پی

چارسدہ: تنگی کی تحصیل کچہری پر دہشت گردوں کے حملے میں 7 افراد جاں بحق جب کہ 15 زخمی ہوگئے ہیں۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق چارسدہ کی تحصیل تنگی میں دہشت گردوں نے اس وقت کچہری میں داخل ہونے کی کوشش کی جب عدالتی امور نمٹائے جارہے تھے اور ججز، وکلا اور سائلین کی بڑی تعداد وہاں موجود تھی۔ واقعے کے فوری بعد وہاں تعینات پولیس اہلکاروں نے کارروائی شروع کردی اور دہشت گردوں کے ناپاک عزائم ناکام بنادیئے۔

اس خبر کو بھی پڑھیں : پشاورمیں ججوں کی گاڑی پر خودکش حملہ

ڈی پی اوچارسدہ سہیل خالد کا کہناہے کہ 3 خودکش حملہ آوروں نے تحصیل تنگی کی کچہری میں داخل ہونے کی کوشش کی، سیکیورٹی اہلکاروں کی موجودگی پر ایک خودکش حملہ آور نے خود کو اڑایا، جس کے بعد دیگر دو حملہ آوروں نے فائرنگ اور دستی بم حملے کرنا شروع کردیئے تاہم پولیس کی جوابی کارروائی میں دونوں دہشت گرد ہلاک ہوگئے۔

مشیر اطلاعات مشتاق غنی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے واقعے میں 7 افراد جاں بحق جب کہ 15 زخمی ہوئے لیکن پولیس کی بہادری نے قیمتی انسانی جانوں کو بچا لیا، اگر پولیس بروقت کارروائی نہ کرتی تو بڑا سانحہ ہو سکتا تھا، ساری دہشت گردی افغانستان سے ہو رہی ہے، نیٹو افواج سے سوال ہے کہ وہ افغانستان میں کیا کر رہی ہیں۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں نے کچہری میں داخل ہونے کی کوشش کی لیکن پولیس اہلکار دہشت گردوں کے سامنے سیسہ پلائی دیوار بن گئے، انہوں نے دہشت گردوں کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔ اس دوران کئی پولیس اہلکار زخمی بھی ہوئے لیکن دیگر اہلکار اپنے مورچوں پر کھڑے رہے اور بہادری سے لوگوں کی جانیں بچائیں۔

وزیراعظم نواز شریف نے چارسدہ دھماکے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے خاتمہ میں کامیاب ہوں گے، حکومت دہشت گردوں کے خلاف کارروائی جاری رکھے گی جب کہ قوم کے حوصلے بلند ہیں حملوں سے گھبرانے والے نہیں ۔ وزیراعظم نواز شریف نے شہید ہونے والوں کے اہل خانہ سے اظہارہمدردی کی اور حملہ ناکام بنانے پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے کردارکو سراہتے ہوئے کہا کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کی قربانی لائق تحسین ہے، اہلکاروں نے قربانی دے کربڑے حادثہ سے بچا لیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ پولیس کی چارسدہ میں دہشت گردوں کے حملے کی بروقت جوابی کارروائی نے کئی قیمتی جانیں بچائیں، پولیس اہلکاروں  نے جواں مردی  سے دہشت گردوں کو ان کے ہدف تک پہنچنے سے بچایا جو قابل فخراورلائق تحسین ہے۔

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے چارسدہ میں قیمتی جانوں کے ضیاع پرگہرے رنج کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس کے جوانوں کی جرات اوربروقت کارروائی سے قوم بڑے المیے سے محفوظ رہی، جس پرپختونخوا پولیس کو زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے صوبائی حکومت کوہدایت کی کہ زخمیوں کی مکمل نگہداشت اور بہترین علاج معالجہ یقینی بنایا جائے۔

وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان نے چارسدہ تنگی کچہری پردہشت گردوں کے حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ کا اظہارکیا ہے۔ وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے چارسدہ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہم حالت جنگ میں ہیں ہمیں بہادری کے ساتھ دہشتگردوں کا مقابلہ کرنا ہے۔ دہشت گرد بزدلانہ کارروائیوں سے ہمارے حوصلے پست نہیں کرسکتے اور ناکامی ان کا مقدر بنے گی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔