نواز شریف کے دل میں تکلیف، پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں طبی معائنہ

ویب ڈیسک  منگل 22 جنوری 2019
 چیف ایگزیکٹو پی آئی سی ڈاکٹرز کے ہمراہ سابق وزیراعظم کا چیک اپ کریں گے۔ فوٹو:فائل

چیف ایگزیکٹو پی آئی سی ڈاکٹرز کے ہمراہ سابق وزیراعظم کا چیک اپ کریں گے۔ فوٹو:فائل

 لاہور: پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے ماہرین نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کا تفصیلی طبی معائنہ کیا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق کوٹ لکھ پت جیل لاہور میں العزیزیہ اسٹیل مل کیس میں سزا کاٹنے والے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو گزشتہ کچھ روز سے دل میں تکلیف کا سامنا تھا، نواز شریف کو ان کی طبیعت کو مد نظر رکھتے ہوئے پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی لایا گیا۔

اس خبر کو بھی پڑھیں : ‎نوازشریف کی جیل میں طبیعت خراب، اسپتال لے جانے کی تیاریاں

نواز شریف کی اسپتال آمد کے موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے، ایمرجنسی وارڈز کے داخلی راستوں پر پولیس کی نفری تعینات کی گئی جب کہ مریضوں کے تیمارداروں کو وارڈ سے باہرنکال دیا گیا اور مریضوں کےلئے متبادل انتظامات کیے گئے ہیں۔ چیف ایگزیکٹو پی آئی سی نے دیگر ماہرین کے ہمراہ نواز شریف کا تفصیلی طبی معائنہ کیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پی آئی کے ماہرین کی ایکو رپورٹ کے مطابق نواز شریف کے دل کے پٹھے معمول سے تھوڑے زیادہ سخت ہیں، اس کے علاوہ ان کی ای سی جی رپورٹ بھی تسلی بخش نہیں ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے ٹویٹ میں سابق وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نواز نے کہا کہ میں پہلے کہہ چکی ہوں کہ میاں نواز شریف کی طبیعت ٹھیک نہیں ہے اور انہیں پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی لے جایا جارہا ہے لیکن مجھے اور ہماری فیملی کو اس حوالے سے آگاہ تک نہیں کیا گیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔