تازہ ترین 
< >
rss

 سعد اللہ جان برق

اردو کے ماخذات (پہلا حصہ)

زبانوں کے دوسرے مرحلے میں جب انسانی مخرج صاف ہوگیا تو اس ’’اڑ‘‘کا ار ہوگیا۔

September 15, 2020

خطائے بزرگاں گرفتن خطاست

دانا دانشور لوگ تھے اچھی طرح جانتے تھے کہ یہ جو ہم کر رہے ہیں یا کہہ رہے ہیں غلط ہے۔

September 11, 2020

یادوں کے جنازے

ایک دن ایک اجنبی عورت نے آکر دیکھا توچلانے لگی، اے لوگوں کہاں ہوتم۔

September 9, 2020

کامیابی کی کنجی رسوائی

لباسوں کا رنگ سرزمین اور انسانوں کے رنگوں سے الٹ ہوتا ہے۔

September 5, 2020

بڑا بھائی اور پنٹر لوگ

یہ دیکھو یہ سیڑھیاں ’’اوپر‘‘ جاتی ہیں اور کمال ہے کہ یہی سیڑھیاں اوپر سے نیچے بھی آتی ہیں۔

September 4, 2020

کانچ کے پاؤں اور پتھریلا راستہ

عوام کو ’’حقوق‘‘دینے کے بجائے ’’بھیک دینے‘‘ والے حکومت ہی کا ایک ذیلی دستہ ہوتے ہیں۔

September 2, 2020

جوڈرگیا وہ بچ گیا

عام آدمی کے پاس صرف ایک گدھا ہوتا ہے جو وہ ’’خود‘‘ ہوتا ہے۔

August 25, 2020

لینا ہی لینا،اور دینا کچھ نہیں

ہمارے ہاں حکمرانیہ وعوامیہ اور حقوق وفرائض کا جوڑا ٹوٹ چکا ہے، لنگڑا ہوچکاہے۔

August 22, 2020

مہمانی اور میزبانی کے آداب

میزبان کے فرائض توظاہر ہیں لیکن ’’مہمان‘‘پرجو فرائض عائد ہوتے ہیں ان کا زیادہ ذکر نہیں ہوتا۔

August 21, 2020

محکمہ ہائے انسداد وامداد

ہم وہ پرانا قصہ تو آپ کو نہیں سنائیں گے جس میں ایک ’’دانا‘‘نے دریا کی لہروں کوبھی آمدنی کی لہروں میں بدل دیاتھا۔

August 19, 2020
16