تازہ ترین 
< >
rss

 آفتاب احمد خانزادہ

ہم شکوؤں والی گلی کے مکین ہیں

صرف مُردوں کو مسائل اور دکھوں کا سامنا نہیں ہوتا ہے۔

August 30, 2017

کھلا کھائیں گے کھلا نہائیں گے

ڈائنوسار کتنے طاقتور تھے لیکن انھوں نے اپنے آپ کو حالات کے مطابق تبدیل نہیں کیا اور آج ان کا نام و نشان تک مٹ گیا ہے

August 26, 2017

دیوانوں کے غول کے غول

ملک سے میرٹ، شفافیت، ایمانداری، سچ کو مٹاتا جا رہا ہے جو صرف دولت کے دیوانوں کے غول کے غول پیدا کرتا جا رہا ہے

August 23, 2017

کیا وہ گداگر نہیں ہیں؟

یہ معاشرے کے وہ عناصر ہوتے ہیں جو خود لڑ کر اپنے لیے مقام حاصل کرنے کے بجائے دوسروں کے حصے میں سے طلب کرنے لگتے ہیں

August 19, 2017

اپنے آپ پر قابو رکھیں

آپ کچھ دن اکیلے گزاریے اور اپنے رویے اور طرز عمل پر خوب سوچ بچار کیجیے۔

August 16, 2017

آمدنی دگنی ہوسکتی ہے

پاکستانی سیاست کا یہ منظرنامہ آج ہم سب دیکھ رہے ہیں یہ سب کچھ جمہوریت کی آڑ میں ہو رہا ہے

August 12, 2017

ذکر سے ہی رونا آجاتا ہے

لنکن کی بڑی خوبی یہ تھی کہ وہ کسی کو الزام نہیں دیتا تھا بلکہ اپنی غلطیوں کو کھلے دل سے تسلیم کرتا تھا۔

August 9, 2017

یہ تو آغاز ہے

عوام میں رفتہ رفتہ یہ شعور بیدار ہوتا جا رہا ہے کہ ہمیں اپنے نمایندے ایسے منتخب کرنے چاہئیں جو بدعنوانی سے دور رہیں۔

August 2, 2017

ڈٹ جائیں، مقابلہ کریں

ظاہر ہے جیسے مشیر ہونگے ویسے ہی مشورے ہونگے اور پھر ویسی ہی صورتحال پیدا ہو گی۔

July 26, 2017

دعائیں، بددعائیں انسان کا پیچھا کرتی ہیں

دنیا کے تمام فلسفیوں تمام صوفیوں نے یہ ہی بات سمجھانے کی کوشش کی ہے کہ ہم سب فانی ہیں اور دنیا میں مہمان ہیں

July 22, 2017
36