تازہ ترین 
< >
rss

 آفتاب احمد خانزادہ

کیا ایسا ہی چلتا رہے گا؟

کیا یہ ملک ذہنی مریض بننے کے لیے حاصل کیا گیا تھا۔ کیا یہ ملک فاقے کرنے اور خود کشیاں کرنے کے لیے حاصل کیا گیا تھا۔

September 13, 2014

بربادیوں کا جنگل

انصاف اور قانون سب کے لیے ایک جیسا کرنا ہو گا۔۔۔۔

September 10, 2014

کرداروں کے کردار نہیں مرتے

ہماری جمہوریت کا حال بھی ویمر کے دربار کی طرح ہے بے مقصد، لاحاصل، صرف گپ شپ ۔۔۔

September 6, 2014

یہ فتح کے نشان ہیں یا شکست کے؟

کیا بچوں اور عورتوں کا قتل بہادری ہے کیا میں نے یہ سب کچھ اپنی سلطنت کو وسعت دینے اور دولت مند کرنے کے لیے کیا

September 3, 2014

آج پھر سقراط کا زمانہ ہے

ہماری اخلاقی زندگی خطرے میں ہے آج ہم انسانیت کے چیتھڑے ہیں اس سے زیادہ کچھ نہیں ...

August 30, 2014

آگے سٹرک بند ہے

تمام انسانوں کے احساسات بنیادی طورپر ایک جیسے ہیں، ضروریات ایک جیسی ہیں ہمت اور بہادری اور قربانی کے جذبے ایک جیسے ہیں

August 26, 2014

کمزور خواہش اور عظیم نتائج

کامیابی کی تمام داستانیں عظیم ناکامی کی کہانیاں ہوتی ہیں ناکامی کے صدمے ہی میں آپ وہ جرأت پاتے ہیں جو...

August 22, 2014

ہم آہنگی اور یکجہتی کا منظر

اس حقیقت سے اب کوئی انکار نہیں کر سکتا ہے کہ موجودہ حکومت اپنے اس دور اقتدار میں بھی نہ تو اچھی حکمرانی دے سکی ہے۔۔۔

August 20, 2014

عقل کی دنیا پر حکمرانی

کرامویل کے بارے میں کارئل کا کہنا تھا ’’خطرناک جنگ کی تاریکیوں میں وہ امید کا الائو بن کر روشن ہوا۔‘‘

August 16, 2014

چھوٹے چھوٹے دیوتا

تدبیر کی طاقت ہر طاقت سے بڑی طاقت ہے اسی تدبیر کی طاقت نے ہمارے حکمرانوں کو جو طاقت پر بھروسہ کرتے تھے ۔۔۔

August 12, 2014
69