’’میرے پاس تم ہو‘‘ کے اختتام پر سیاستدانوں کے بھی دلچسپ تبصرے

ویب ڈیسک  اتوار 26 جنوری 2020
اتنا بہترین ڈراما پیش کرنے پر مصنف اور ڈرامے کی پوری ٹیم داد کی مستحق ہے، فواد چوہدری فوٹوفائل

اتنا بہترین ڈراما پیش کرنے پر مصنف اور ڈرامے کی پوری ٹیم داد کی مستحق ہے، فواد چوہدری فوٹوفائل

کراچی: ڈراما سیریل ’’میرے پاس تم ہو‘‘ کے اختتام پر جہاں پوری پاکستانی قوم نے اپنے اپنے انداز میں اظہار خیال کیا وہیں سیاستدانوں نے بھی دلچسپ انداز میں اس کی تعریف کی ہے۔

ڈراما سیریل ’’میرے پاس تم ہو‘‘کے اختتام کا انتظار جہاں پوری پاکستانی عوام کررہی تھی وہیں سیاستدان بھی اس کے سحر میں جکڑے نظر آئے۔ وفاقی وزیر فواد چوہدری نے گزشتہ روز ڈرامے کے اختتام پر سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اتنا بہترین ڈراما پیش کرنے پر پوری ٹیم کو مبارکباد دی۔

یہ بھی پڑھیں: ’دانش جانتا تھا سکون صرف قبر ہے‘، میرے پاس تم ہو کے اختتام پر وائرل پوسٹس

فواد چوہدری نے لکھا اے آر وائی کو اتنا بہترین ڈراما پیش کرنے پر مبارکباد، مصنف اور ڈرامے کی پوری ٹیم داد کی مستحق ہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا میں نیٹ فلیکس اور ایمازون سے پھر کہتا ہوں کہ پاکستانی ڈراموں میں سرمایہ کاری کریں۔ کیونکہ پاکستانی ڈرامے بھارتی ڈراموں سے بہت بہتر ہیں جب کہ ہمارامیوزک بھی کئی درجے اوپر ہے۔ آپ کو پچھتانا نہیں پڑے گا۔

صرف فواد چوہدری ہی نہیں بلکہ ایم کیو ایم پاکستان کے سابق کنوینر ڈاکٹر فاروق ستار بھی ’’میرے پاس تم ہو‘‘ کے سحر سے نکل نہیں پائے۔ گزشتہ دنوں ان کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر بہت وائرل ہوئی جس میں وہ ایک تقریر کے دوران بڑے ہی ڈرامائی انداز میں ڈرامے کا او ایس ٹی (اوریجنل ساؤنڈ ٹریک) ’’میرا یہ بھرم تھا میرے پاس تم ہو‘‘گاتے نظر آئے۔ اس ویڈیو کو سوشل میڈیا صارفین نے بہت بڑی تعداد میں شیئر کیا۔

اس کے علاوہ پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی اورمیزبان عامر لیاقت حسین نے بھی ڈرامے کے اختتام پر ٹوئٹر پر کئی مزاحیہ ٹوئٹس کیں۔ عامر لیاقت نے اپنی ٹوئٹس میں سیاسی وزرا کو بھی طنز کا نشانہ بنایا۔

 

عامر لیاقت نے یہ بھی کہا کہ انہوں نے ڈرامے کی ایک قسط بھی نہیں دیکھی تاہم ان کی اہلیہ سید طوبیٰ انہیں ڈرامے سے متعلق بتاتی رہتی ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔